چائینہ نے پہلا ہیک پروف کوانٹم مواصلاتی سیارہ فضا میں چھوڑ دیا


چائینہ نے دعویٰ کیا ہے اس نے ایک ایسا مواصلاتی سیارہ تیار کیا ہے جس کی ترسیل شدہ معلومات کو ہیک نہیں کیا جا سکے گا۔ماہرین کا تجرباتی پیغام اگر کامیاب رہا تو یقیناً ورلڈ وائیڈ نیٹ ورک میں یہ ایک بہت بڑی اور اہم انتہائی اہم پیش رفت ہو گی۔اس مصنوعی سیارے کو خلا میں لانگ مارچ 2D راکٹ کے ذریعے چین کے شمالی مغربی حصے میں واقع گوبی صحرا کے جیوکان لانچ بیس سے آج صبح خلا میں روانہ کیا گیا ۔ماہرین کے مطابق خلا سےمعلومات بھیجنے اور زمین پر وصول کرنے والا ٹرمینل دونوں ہی ہیکنگ سے محفوظ ہوں گے ۔سینٹر آف کوانٹم ٹیکنالوجی سنگا پور کی تحقیقاتی ٹیم کی صدر الیگزینڈر لنگ کا کہنا ہے کہ ان کا یہ کام یقیناً ہیکرز کے لیے ایک چیلنج ثابت ہو گا۔دنیا بھر میں بہت سے لوگوں کا خیال ہے کہ کوانٹم سطح پر ہونے والی مواصلات کو مکمل محفوظ ہونا چاہیے ۔یورپین اور امریکن اگرچہ کوانٹم مواصلات کے حوالے سے کام کررہے ہیں مگر چاہینہ نے مواصلاتی سیارے کو خلا میں بھیج کر برتری حاصل کر لی ہے ۔کوانٹم مواصلات اصل میں ایٹم کے ذیلی ذرات کا دو نقاط میں محفوظ رابطہ ہے ۔ہیکرخلا سے بھیجے جانے والے اس پیغام کو کریک کرنے ،بدلنے اور ختم کرنے کی بھر پور کوشش کریں گے۔سٹیلائٹ نیٹ ورک کے ذریعے تیز رفتار اور محفوظ پیغام رسانی دنیا بھر میں ممکن ہو سکے گی ،اس کامیابی کے بعد اس ٹیکنالوجی کا ممکنہ استعمال دوسرے ذرائع میں بھی کیا جا سکے گا۔



Jump to Landing Page | More News

If you want to report any news then contact us @ [email protected]